صرف چند دنوں میں بواسیر ختم بواسیر کا علاج اور بواسیر کی علامتیں

بواسیر انتڑیوں کی بیماری ہے ۔ جو انتڑیوں کی کارکردگی میں خرابی واقع ہونے سے پیدا ہوتی ہے۔ یہ مرض گرمی کی نسبت سردی کے موسم میں زیادہ رونما ہوتا ہے کیونکہ سردیوں میں عام طور پر ہم پانی کم پیتے ہیں نتیجتاً جسم میں خشکی کا غلبہ ہو کر انتڑیوں میں نقص ہو جاتا ہے اور افعال میں نقص پیدا ہو جاتا ہے جو بواسیر کی صورت میں بظاہر ہو کر تکلیف کا سبب بنتا ہے ۔ بواسیر کا مرض خلط ودا میں زیادتی ہونے کی وجہ سے نمودار ہوتا ہے بواسیر اقسام کے لحا ظ سےتین طرح کی ہو تی ہیں

خونی بادی اور مسوں والی بڑی آنت میں سوزش کی وجہ آخری حصے میں ورم ہوجانے سے مقعد بھی متاثر ہو جاتاہے یوں مقعد کا منہ پھول کر مسے کی شکل اختیار کر لیتا ہے خونی بواسیر میں مقعد سے خون رس کر براز کے ساتھ نکلنے لگتا ہے جبکہ بادی بواسیر میں خون تو نہیں نکلتا البتہ تکلیف خونی بواسیر سے بھی زیادہ ہوتی ہے کیونکہ مقعد کے منہ پر مسے نمودار ہونے سے رفع حاجت کے وقت انتہائی اذیت کا سامنا کر نا پڑتا ہے خونی اور بادی بواسیر کی علامات میں کچھ زیادہ فرق نہیں پایا جاتا ۔

بواسیر کی دونوں اقسام میں مریض شدید قبض میں مبتلا ہوجاتا ہے۔ مقعد کے منہ پر تیز جلن اور بہت خارش ہوتی ہے براز کے اخراج میں تنگی اور تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ مریض کی بھوک ختم ہو جاتی ہے۔ قوتِ ہاضمہ میں خرابی پیدا ہو کر تبخیر، تیزابیت اور گیس پیدا ہونے لگتی ہے۔ براز کے مکمل طور پر اخراج نہ ہونے سے اپھارہ سا ہو کر پیٹ پھولا سا رہتا ہے۔ منہ سے بُو آتی ہے۔ چہرے کی رنگت زرد اور جسم کمزور ہو جاتا ہے۔ جوڑوں اور کمر میں درد محسوس ہونے لگتا ہے

نیند میں کمی آجاتی ہے ۔ مزاج میں چڑاچڑاپن پیدا ہونے لگتا ہے ۔ طبیعت بے چین رہنے لگتی ہے۔ یہ بواسیر کی علامتیں ہیں اب ہم آپ کو اس کا علاج کے بارے میں بتاتے جو انشاءاللہ بواسیر کا شافی علاج ہے۔ بواسیر کے علاج کے لئے جو اجزاء درکار ہیں ان میں خالص شہد آدھا کلو اور تازہ انجیر زرد آدھا کلو چاہیے۔ سب سے پہلے انجیر کو دستے میں ڈال کر آہستہ آہستہ کو ٹیں اور شہد تھوڑا تھوڑا شامل کرتے جائیں۔ جب تمام اجزاء اچھی طرح سے کوٹ جائیں اور معجون کی سی شکل اختیار کر لیں تو انھیں کسی شیشے کے جار میں محفو ظ کر لیں اب یہ نسخہ تیار ہے۔ اب ایک بڑا چمچ صبح ودوپہر وشام کو پانی سے لیں اورگرم مزاج والے دودھ کے ساتھ استعمال کر یں

دودھ اگر گائے کا ہو تو بہترین ہے اس کو بہت اچھی طرح چبا کر کھائیں تو بہت بہتر ہے۔ پرہیز کے طور پر خالی پیٹ چائے اور سگریٹ کے استعمال سے اجتناب کریں اور کچی سبزیوں کو بطورِ سلاد ہر موسمی اور ہر کھانے میں لازمی شامل کریں ۔ کولا مشروبات ، لال مرچ اور گرم مصالحہ سے پرہیز کریں ۔ بادی والی اور بازاری وبیکری کی اشیاء سے مکمل پرہیز کریں۔روزانہ کم از کم آٹھ سے دس گلاس پانی پینا معمول بنائیں کھانا کھانے کے فوراً بعد نہ لیٹیں اور مکمل خاتمے کے لئے اس نسخے کو دو ماہ ضرور استعمال کریں۔ انشاءاللہ پرانی سے پرانی بواسیر بھی اس نسخہ سے رفع ہو جاتی ہے اور اس نسخے کی خاص بات شہد اور انجیر ہے ۔ جن کا ذکر قرآنِ مجید وحدیث میں ہے۔ اُمید ہے یہ نسخہ آخری ثابت ہوگا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.