چہرے کے غیر ضروری بال کیسے ہٹائے جا سکتے ہیں؟

خواتین کے چہرے پر غیر ضروری بال انتہائی پریشان کُن مسئلہ ہیں جو چہرے کی خوبصورتی کو ماند کر دیتے ہیں۔ جب خواتین کی عمر پینتس سال سے بڑھتی ہے تو بالوں میں اضافہ کے ساتھ ان کی موٹائی بھی زیادہ ہو جاتی ہے۔ خواتین کی پیشانی، آنکھوں کے ارد گرد، تھوڑی، گردن اور ہونٹوں کے اوپری حصے پر بال اُگتے ہیں۔

ان بالوں سے چھٹکارہ پانے کے لئے خواتین تھریڈنگ، بلیچ، کریم اور لوشن کا استعمال کرتی ہیں۔ ان چیزوں سے وقتی طور پر بال تو صاف ہو جاتے ہیں لیکن دوبارہ اُگنے والے بال لمبے اور موٹے ہوتے ہیں۔ کیونکہ وہ جڑ سے نہیں اُکھڑتے۔ اس کے لئے کوئی ایسا طریقہ کار زیادہ بہتر رہتا ہے جس میں بال جڑ سے نکلیں، جڑ سے نکلنے والے بال دوبارہ اُگنے پر ہلکے ہوتے ہیں اور پھر آہستہ آہستہ ختم ہو جاتے ہیں۔ چہرے پر موجود غیر ضروری بال ہٹانے کی تراکیب جاننے سے پہلے یہ جاننا بہت ضروری ہے کہ ان بالوں کے پیدا ہونے کی بنیادی وجہ کیا ہے۔ مرد حضرات میں چہرے پر غیر ضروی بال “انڈروجن” ہارمون کی اضافی پیداوار کے باعث نکلتے ہیں۔ اگر خواتین میں بھی اس ہارمون کی مقدار بڑھ جائے تو چہرے پر اضافی بال پیدا ہوجاتے ہیں اور اس بیماری کا نام “Hirsutism’’ ہے ۔ ہرسوٹزم کی بنیادی وجہ پولی سسٹک اویرین سئنڈروم ہے۔ لیکن اکثر اوقات یہ بیماری جینیاتی بھی ہوتی ہے اور اکثر اوقات کسی دوائی کے استعمال سے بھی چہرے پر اضافی بال پیدا ہوجاتے ہیں۔ چہرے کے غیر ضروری بال ہٹانے کےلئے کچھ پرانےٹوٹکے آج بھی کارآمد ہیں لیکن ہم لوگ دورِ جدید میں ان کو اہمیت نہیں دیتے ۔ اِن میں سے کچھ فائدہ مند طریقہ کار یہ ہیں۔ سپئرمنٹ چائے خواتین میں انڈروجن کی مقدار کو برابر رکھتی ہے ۔ سپئرمنٹ چائے بنانے کا آسان طریقہ ہے۔ ایک کپ پانی ابالیں اب ایک چائے کا چمچہ خشک سپئرمنٹ یا پانچ سے چھ سپئرمنٹ کے تازہ پتے شامل کر کے چولھے سے اُتار لیں۔پانچ منٹ تک چائے کو ڈھک کرچھوڑ دیں

اور اس کے بعد چھان کر پی لیں۔ دن میں ایک مرتبہ اس چائے کا استعمال اس مسلئے کو حل کرنے کے لیے کافی ہے۔ 30 پیاز پر موجود شفاف پتلی جھلی اور نو سے بارہ تلسی کے پتے اس ٹوٹکے کو کرنے کے لیے ضروری ہے۔ پیاز پر موجود جھلی کو پیس کر پیسٹ بنا لیں تقریباً دو پیاز کی جھلیاں استعمال کریں اور اس میں تلسی کے پتے شامل کر کے پیس لیں۔ اس آمیزے کو چہرے کے اُن حصوں پر لگائیں جہاں اضافی بال ہیں۔ اس ٹوٹکے کے ایک ماہ استعمال سے ایک ماہ کے اندر ہی چہرے کے اضافی بال ختم ہوجائے گے اور آپ کو من چاہے نتائج موصول ہو جائیں گے۔ اس عمل کے مسلسل استعمال سے آپ اس بیماری سے ہمیشہ کے لیے چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں۔ 3 پپیتے اور ہلدی کا پیسٹ اس پیسٹ کو بنانے کے لیے آپ کو کچے پپیتے اور آدھا چمچہ ہلدی پاوڈر کی ضرورت ہے۔ چہرے کے غیر ضروری بالوں کا ہمیشہ کے لیے صفایہ کرنے کے لیے یہ بہت اچھا ٹوٹکہ ہے۔ اس پیسٹ کو استعمال کرنے کے لیے طریقہ یہ ہے کہ آپ اس پیسٹ کو چہرے پر پندرہ منٹ کے لیے لگا کرچھوڑ دیں اور پھر منہ دھولیں۔ایک ہفتے میں ہی بہترین نتائج موصول ہوں گے۔ 4 انڈے، شوگر اور کارن فلور کا پیسٹ اس پیسٹ کو بنانے کے لیے آپ کو ایک انڈے کی سفیدی ، ایک چائے کا چمچہ چینی اور ایک چمچہ کارن فلور کی ضرورت ہے۔ ان تمام اجزاء کو شامل کر کے پیسٹ بنالیں اور انہیں چہرے پر موجود اضافی بالوں پر لگائیں جب یہ ماسک سوکھ جائے تو رگڑتے ہوئے

چہرے سے اُتار دیں۔ بہترین نتائج حاصل کرنے کے لیے اس ٹوٹکے کو ہفتے ہیں دو مرتبہ استعمال کریں۔ 5 ہلدی اور انڈین نیٹل INDIAN NETTLE کا پیسٹپتے اور نیم کے پتوں کی ضرورت ہوتی ہے۔اس پیسٹ کو چہرے کے متاثرہ حصوں پر لگائیں اور سوکھنے دیں اس کے بعد اس ماسک کو چہرے سے اتار لیں۔ 6 بیسن، دہی اور ہلدی دو کھانے کے چمچ بیسن ، ایک چوتھائی چائے کا چمچ ہلدی اور تھوڑی سی دہی ملا کرپیسٹ بنا لیں اور چہرے پر لیپ کر لیں اور جب سوکھ جائے تو اس کے اوپر ہلکے ہاتھوں سے ناریل کا تیل یا پانی لگا کر رگڑتے ہوئے اُتار دیں اور پھر چہرہ دھو لیں۔ 8 آلو اور مسور کی دال کا لیپ حسبِ ضرورت آلو اور مسور کی دال پیس کر لیپ بنائیں اور اس کو مزکورہ حصے پر لگا کر پندرہ منٹ چھوڑ دیں اور پھر دھو لیں۔ یہ نہ صرف بالوں کی رنگت ہلکی کر دے گا بلکہ ان کی افزائش کو بھی روکے گا کیونکہ آلو میں بلیچ کے اثرات پائے جاتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.