بڑا سیاسی تہلکہ۔۔!! مریم نواز سے گزشتہ 15 روز میں کس بھارتی شخصیت نے دو بار ملاقات کی؟ ایک انکشاف نے پورے ملک میں ہلچل مچا دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے دعویٰ کیا ہے کہ مریم نواز گزرے 15 روز میں ایک بھارتی شخص سے دو مرتبہ ملاقات کر چکی ہیں۔ معاون خصوصی شہبازگل نے پریس کانفرنس میں یہ بھی انکشاف کیا کہ نوازشریف نے لندن میں جس سفارتخانے

سے ملاقاتیں کیں سب معلوم ہے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم کے معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ سابق وزیراعظم اور ن لیگی قائد کے بیٹے کی لندن کے فور سیزن ہوٹل میں بھارت سے آئے 3 لوگوں کے ساتھ میٹنگ ہوئی ہے اور مریم نواز بھی گزرے 15 روز میں بھارتی شخصیت سے دو مرتبہ مل چکی ہیں۔ سابق وزیراعظم اور پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد سے الفاظ بھارتی اسٹیبلشمنٹ کہلوا رہی ہے اور وقت آنے پر ساری تفصیلات بتائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف مجرم ہیں ان کے عام شہری کی طرح حقوق نہیں کیونکہ کریمنل کو جمہوری کہنا بھی جرم ہے۔ اس طرح کے لوگ اپنے آپ کو جمہوری کہتے ہیں تاہم ان کو کوئی غدار نہیں کہہ رہا خود متحدہ بانی کی طرح تقریریں کر رہے ہیں۔ شہباز گل کا کہنا تھا کہ ہر طرف سے جواب ملنے پر نواز شریف کو انقلابی ہونے کا شوق پیدا ہوا اور رانا ثنااللہ شہبازشریف گروپ کے آدمی ہیں کیونکہ وہ بڑے میاں کے بیانیے کا وزن نہیں اٹھا سکتے۔ چودھری نثار معتبر سیاست دان ہیں اور وہ آگے بڑھ کر محب وطن ورکرز کو اکٹھا کریں اور چاہتے ہیں جمہوری اپوزیشن ہو۔ شہباز گل سے سوال کیا گیا کہ کیا وفاقی حکومت نے چودھری نثار سے رابطے کیا، جس پر معاون خصوصی سوال کا جواب گول کر گئے اور کہا کہ یہ کہانی پھر کبھی بتائیں گے اور اہم راز سے پردہ اٹھائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ احتساب، کرپشن کیسز سمیت کسی سے کوئی بات نہیں ہو گی اور راجہ ظفرالحق محب وطن پاکستانی ہیں اگر کوئی قانون سازی سمیت بات کرنا ہو گی تو کریں گے۔ غداروں سے کیا بات کریں جنہوں نے ملک لوٹا۔ شہباز گل کا کہنا تھا کہ نوازشریف کرپٹ ہے اس لیے فوج کے ساتھ مسئلہ ہے، وزیراعظم عمران خان کو تو فوج کے ساتھ کوئی مسئلہ نہیں۔ سابق وزیراعظم ضیاالحق کے بغل بچے تھے اور امیرالمومنین بننا چاہتے تھے۔ شہباز گِل نے کہا کہ نواز شریف بھارت کے ایجنڈے پر نہ چلیں، ن لیگ سازشی لیگ بن چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف وہ لالچی بزنس مین ہیں جو پیسے کیلئے را کے ایجنٹ بن جاتے ہیں۔ انہیں عاصم باجوہ سے اس لیے مسئلہ ہے کہ انہوں نے کلبھوشن کو پکڑا۔ شہباز گل نے کہا کہ حکومت عاصم باجوہ سے مطمئن ہے، کسی کو اعتراض ہے تو عدالت چلا جائے۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ نوازشریف چاہے بانی ایم کیوایم بن جائیں پروا نہیں مگر پیسوں کا حساب دیں۔ شہباز گِل کا کہنا تھا کہ نواز کو اندازہ نہیں بھارت ان کی تقریر کس طرح استعمال کرسکتا ہے، ن لیگ کے 8 لوگوں نے کہا وہ نوازشریف کے بیان پر شرمندہ ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.